Legend Muhammad Zeeshan Arshad

لیجنڈ آف اللہ

دشمنی سے نہیں ہوتا وہ قبر میں فنا
اپنے حکم سے زندگی جسے دیتا ہے خدا

وہ کفر کی گندگی انہی لوگوں پر ڈالتا ہے جو عقل سے کام نہیں لیتے (لیجنڈری قرآن 10.100)

ارے یہ اعمال بھی سنت ہیں

تحریر: لیجنڈ محمد ذیشان ارشد

Date: June 15, 2017

اگر نفس کی سہولت کیلئے صرف انہیں سنتوں کا انتخاب کیا ہے جو ذاتیات سے تعلق رکھتی ہیں تو ہم یہ کیوں بھول جاتے ہیں کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا اصل کردار معاملات میں نظر آتا ہے اور معاملات کے بارے میں ہی وہ احادیث ہیں جن میں فرمایا گیا ہے کہ ’وہ ہم سے نہیں‘ یا ’وہ مومن نہیں‘۔

کبھی ٹھنڈے دل سے سوچو کہ اسلام پر عمل کرتے ہو یا نفس کی غلامی اپناکر رکھی ہے؟

بچپن سے جوانی اور جوانی سے بڑھاپے تک تم اس لئے گم شدہ راہ پر ہو کہ اسلام کے سیدھے راستے پر کبھی چلے ہی نہیں تھے ۔

اگر ڈاڑھی رکھنا سنت ہے۔
اگر پاجامہ اوپر رکھنا سنت ہے۔
اگر مسواک کرنا سنت ہے۔
اگر تین انگلیوں سے کھانا سنت ہے۔
اگر میٹھا کھانا سنت ہے۔

تو پھر۔۔۔۔

ہمیشہ سچ بولنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
وعدہ پورا کرنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
پڑوسیوں کا خیال رکھنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
مجبور و بے سہارا عورتوں کی مدد کرنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
فاقہ کرنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
جوانی میں چالیس سالہ عورت سے شادی کرنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
جوانی میں ظالموں کے خلاف گروپ بناکر ظلم روکنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔
کافروں کو اسلام میں داخل کرنے کیلئے کوششیں کرنا بھی حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے۔

اگر سنت پر عمل کرنے کا بہت زعم ہے تو پھر ان سنتوں پر بھی عمل کرو۔ صرف نفسانی مزے لینے کی خاطر سنت کی آڑ میں دین کے ساتھ کھلواڑ کرنا کیا مذاق ہے؟


Rightful Religion | Legendary Freelancer
Copyright © 2011 - 2022 All rights reserved.